قبالؔ کو یہ ضد ہے کہ پینا بھی چھوڑ دے

علامہ اقبال، اپنے اور ایک مبلغ کے درمیان ہونے والی گفتگو کو پیش کرتے ہیں جو شراب کے استعمال کو جواز یا دفاع کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ مبلغ شراب پینے کی حمایت میں دلائل یا ثبوت پیش کرتا ہے۔
 
اس کے جواب میں، اقبال نے چالاکی سے مبلغ کو شراب پینا مکمل طور پر ترک کرنے کا مشورہ دیا، اگرچہ اس نے اس کے حق میں کچھ قائل دلائل بھی پیش کیے ہوں۔ یہ تجویز کرتے ہوئے اقبال کا مطلب یہ ہے کہ مبلغ کو صرف کسی چیز کی وکالت اس لیے نہیں کرنی چاہیے کہ وہ ذاتی خواہشات یا لذتوں سے ہم آہنگ ہو، بلکہ اسے چاہیے کہ وہ اسی معیار کو اپنے اوپر لاگو کرے اور اگر اسے صحیح معنوں میں غلط مانتا ہے تو اس سے پرہیز کرے۔
 
یہاں بنیادی پیغام کسی کے عقائد اور اعمال میں مستقل مزاجی کے بارے میں ہے۔ اقبال مبلغ کو چیلنج کرتا ہے کہ وہ نہ صرف تبلیغ کرے بلکہ اس پر عمل بھی کرے جو وہ کسی کے عقائد اور اصولوں میں دیانت اور اخلاص کی اہمیت کو ظاہر کرتا ہے۔
قبالؔ کو یہ ضد ہے کہ پینا بھی چھوڑ دے
مجنوں نے شہر چھوڑا تو صحرا بھی چھوڑ دے
نظّارے کی ہوس ہو تو لیلیٰ بھی چھوڑ دے
واعظ! کمالِ ترک سے مِلتی ہے یاں مراد
دنیا جو چھوڑ دی ہے تو عقبیٰ بھی چھوڑ دے
تقلید کی روِش سے تو بہتر ہے خودکُشی
رستہ بھی ڈھُونڈ، خِضر کا سودا بھی چھوڑ دے
مانندِ خامہ تیری زباں پر ہے حرفِ غیر
بیگانہ شے پہ نازشِ بے جا بھی چھوڑ دے
لُطفِ کلام کیا جو نہ ہو دل میں دردِ عشق
بِسمل نہیں ہے تُو تو تڑپنا بھی چھوڑ دے
شبنم کی طرح پھُولوں پہ رو، اور چمن سے چل
اس باغ میں قیام کا سودا بھی چھوڑ دے
ہے عاشقی میں رسم الگ سب سے بیٹھنا
بُت خانہ بھی، حرم بھی، کلیسا بھی چھوڑ دے
سوداگری نہیں، یہ عبادت خدا کی ہے
اے بے خبر! جزا کی تمنّا بھی چھوڑ دے
اچھّا ہے دل کے ساتھ رہے پاسبانِ عقل
لیکن کبھی کبھی اسے تنہا بھی چھوڑ دے
جینا وہ کیا جو ہو نفَسِ غیر پر مدار
شہرت کی زندگی کا بھروسا بھی چھوڑ دے
شوخی سی ہے سوالِ مکرّر میں اے کلیم!
شرطِ رضا یہ ہے کہ تقاضا بھی چھوڑ دے
واعظ ثبوت لائے جو مے کے جواز میں
اقبالؔ کو یہ ضد ہے کہ پینا بھی چھوڑ دے
 
#AllamaIqbal #Poetry #Philosophy #UrduPoetry #Inspiration #Wisdom #Integrity #Beliefs #Consistency #Sincerity #Quotes #WiseWords #Thoughts #Philosopher #GreatMinds #Poet #Literature #IqbalPoetry #IqbalPhilosophy #UrduShayari #DeepThoughts

Similar Posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *